سیلاب متاثرین کی امداد و بحالی سب کاموں سے عزیز ہے‘ تنہا نہیں چھوڑیں گے : شہبازشریف

Aug 21, 2013| Courtesy by : nawaiwaqt.com.pk

news_detail_img-epaper_id-4712-epaper_page_id-59169-epaper_map_detail_id365849

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ سیلاب متاثرین کی امداد و بحالی سب کاموں سے بڑھ کر عزیز ہے اور خلق خدا کی خدمت ہی میری سیاست ہے اسی لئے سیلاب زدہ علاقوں کی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے خود دورے کر رہا ہوں تاکہ مصیبت میں گھرے بہن بھائیوں کی مشکلات کا فی الفور ازالہ کرنے کیلئے اقدامات اٹھائے جاسکیں۔ آزمائش کی گھڑی میں سیلاب متاثرین کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ انتظامیہ اور متعلقہ ادارے سیلاب متاثرین کی امداد و بحالی میں کوئی کسر  اٹھا نہ رکھیں۔ آپ کے اس خادم نے کل بھی عوام کا ساتھ دیا تھا اور آج بھی مشکل کی گھڑی میں وہ سیلاب زدہ بہن بھائیوں کے ساتھ کھڑا ہے۔ ہمارا جینا مرنا عوام کے ساتھ ہے۔ صوبے میں جہاں بھی سیلاب آیا ہے وہاں پر خود جا کر صورتحال کا جائزہ لے رہا ہوں اور امدادی کاموں کی خود نگرانی کر رہا ہوں۔ جب تک سیلاب کا پانی متاثرہ علاقوں سے واپس نہیں جاتا اور متاثرہ افراد اپنے اپنے گھروں میں آباد نہیں ہو جاتے اس وقت تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔  ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز چنیوٹ کے علاقے ہرسا شیخ کے قریب حفاظتی بند کے معائنے، سیلاب متاثرہ علاقوں کے دورے اور سیلاب زدگان سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ شہباز شریف نے کہا کہ حالیہ بارشیں اور سیلاب ایک چیلنج کی حیثیت رکھتے ہیں اور حکومت نے اس چیلنج سے نمٹنے کیلئے مؤثر اور بھرپور اقدامات کئے ہیں، سیلاب متاثرین کیلئے امدادی سامان، راشن، خیمے، ادویات، منرل واٹر اور کمبل ترجیحی بنیادوں پر مہیا کے جا رہے ہیں، سیلاب سے فصلوں اور گھروں کو پہنچنے والے نقصانات کا جائزہ لینے کیلئے جامع سروے شروع کردیا گیا ہے جس کی روشنی میں متاثرین کے نقصانات کے ازالے کیلئے معاوضہ ادا کیا جائے گا، انتظامیہ اور متعلقہ ادارے ترجیحی بنیادوں پر سیلاب متاثرین کی امداد و بحالی کیلئے اقدامات اٹھائیں اور مصیبت میں گھرے بہن بھائیوں کی مدد کرکے دین و دنیا سنواریں، سیلاب متاثرین کی بحالی پہلی ترجیح ہے اور وزیراعظم محمد نواز شریف نے بھی سیلاب زدگان کی بحالی اور امدادی سرگرمیوں کیلئے خصوصی ہدایات جاری کی ہیں، متاثرین کو امدادی کیمپوں میں خوراک، اشیائے ضروریہ اور منرل واٹر فراہم کیا جا رہا ہے اور ہر متاثرہ خاندان تک امدادی اشیاء کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے ضلعی انتظامیہ کو ہدایت کی کہ امدادی کیمپوں میں تمام بنیادی سہولیات کی فراہمی کو ہر صورت یقینی بنایا جائے۔ وبائی امراض کی روک تھام کیلئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں اور ادویات کی وافر فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔ علاقے سے نکاسی آب کے ساتھ سڑکوں کی تعمیر و مرمت بھی فی الفور شروع کی جائے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ دریائے چناب پر حفاظتی بند کو مزید اونچا اور مضبوط بنایا جائے۔ قبل ازیں وزیراعلیٰ جب چنیوٹ کے علاقے ہرسا شیخ پہنچے تو ڈی سی او نے وزیراعلیٰ کو امدادی کاموں اور سیلاب کی صورتحال کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ 9 ریلیف کیمپس قائم کر دیئے گئے ہیں جبکہ 142 گائوں متاثر ہوئے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے ریلیف کیمپس کا دورہ کیا اور امدادی اشیاء کے معیار کو چیک کیا۔ وزیراعلیٰ نے چنیوٹ کے سیلاب متاثرہ علاقوں کا فضائی جائزہ بھی لیا۔ چنیوٹ سے نامہ نگار کے مطابق شہبازشریف نے کہا کہ  سیلاب سے متاثرہ افراد کی مالی معاونت کی جائے گی، اس مشکل کی گھڑی میں ہم متاثرہ لوگوں کے ساتھ ہے، سیلاب کے دوران انسانی جانوں کے ضیاع پر بڑا دکھ ہوا ہے۔ چنیوٹ میں سیلاب کے دوران جاں بحق ہونے والے چار افراد کے ورثا کو پانچ، پانچ لاکھ روپے کی امداد کا  اعلان کرتا ہوں اور اس کے ساتھ ساتھ چنیوٹ کے جن علاقوں میں  سیلاب کی وجہ سے نقصان ہوا ہے ان کا بھی ازالہ کیا جائے گا۔ دریں اثناء شہبازشریف سے گذشتہ روز ایوان وزیراعلیٰ میں چائنہ نیشنل ٹیکسٹائل اینڈ ایپرل کونسل کے نمائندہ وفد نے ملاقات کی۔ شہبازشریف نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی گارمنٹس انڈسٹری میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ حکومت پنجاب گارمنٹس انڈسٹری کیلئے الگ انڈسٹریل زون بنائیگی۔ پاکستان کے پاس افرادی قوت جبکہ چین ٹیکنالوجی میں مہارت رکھتا ہے۔ چینی سرمایہ کاروں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کیلئے تمام ممکنہ سہولیات فراہم کریں گے۔

nawaiwaqt.com.pk