ہونہار طلباءقیمتی سرمایہ ہیں‘ رواں سال 6 نئے دانش سکول بنائیں گے : شہباز شریف

Aug 27, 2013| Courtesy by : nawaiwaqt.com.pk

news-1377562483-3391

لاہور(خصوصی رپورٹر) وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ تعلیم ہی واحد راستہ ہے جس پر چل کر ملک و قوم کو ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن کیا جا سکتا ہے۔ پنجاب حکومت نے گزشتہ پانچ برس کے دوران صوبے میں فروغ تعلیم کے لئے انقلابی اقدامات اٹھائے جن کی مثال ملک کی 66 سالہ تاریخ میں نہیں ملتی۔ ان اقدامات کی بدولت شرح خواندگی میں خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے اور سکولوں میں بچو ںکے داخلے کی شرح بڑھی ہے۔ ہونہار طالب علموں کے لئے وسائل کی فراہمی اخراجات نہیں بلکہ سود مند سرمایہ کاری ہے۔ ہونہار طالب علم ملک کا قیمتی سرمایہ اور تابناک مستقبل کی ضمانت ہیں۔ پنجاب میں شروع کئے گئے لیپ ٹاپ پروگرام کی بھارتی ریاست اترپردیش میں بھی تقلید کی جا رہی ہے اور یہ بات اس امر کا بین ثبوت ہے کہ شعبہ تعلیم میں صوبہ پنجاب میں کی جانے والی انقلابی اصلاحات کو نہ صرف اندرون ملک بلکہ بیرون ملک بھی شاندار پذیرائی ملی ہے۔ رواں مالی سال 3 ارب روپے کی لاگت سے 6 نئے دانش سکول قائم کئے جائینگے۔ وہ گزشتہ روز اسلام آباد میں طلبہ کے نمائندہ وفد سے بات چیت کر رہے تھے جس میں مختلف تعلیمی بورڈز کے امتحانات میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبا و طالبات بھی شامل تھے۔ شہباز شریف نے طلبہ کے نمائندہ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم کسی بھی ملک کی تعمیر و ترقی اور استحکام میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے۔ تاریخ عالم شاہد ہے کہ انہی اقوام نے ترقی اور کامرانی کی منازل طے کیں جنہوں نے تعلیم کو اپنا شعار بنایا۔ پنجاب حکومت نے گزشتہ دور میں فروغ تعلیم کیلئے انقلابی اقدامات اٹھائے۔ دانش سکولوں کا قیام فروغ تعلیم میں سنگ میل ثابت ہو رہا ہے۔ صوبہ کے دور دراز اور پسماندہ علاقوں میں جہاں غریب لوگوں کے بچے زیور تعلیم سے محروم تھے وہاں دانش سکولوں کا قیام عمل میں لا کر غریب کے بچوں تک تعلیم کی رسائی آسان کردی ہے۔ اب صوبہ کے پسماندہ علاقوں میں غریب ترین لوگوں کے بچے ایچی سن اور گرامر سکولوں سے بھی بڑھ کرمعیاری تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔ تعلیم کا فروغ ہمیشہ سے حکومت کی اولین ترجیح رہی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ بے وسیلہ اور معاشی و سماجی ناہمواریوں کے شکار ذہین اور قابل طلبا کیلئے 7 مختلف اضلاع میں 14 دانش سکول قائم کئے جاچکے ہیں جبکہ رواں مالی سال 3 ارب روپے کی لاگت سے 6 نئے دانش سکول قائم کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ دور حکومت میں 2 لاکھ سے زائد لیپ ٹاپ ہونہار طلبا و طالبات کو صرف اور صرف میرٹ پر تقسیم کئے گئے جس پر اربوں روپے خرچ کئے گئے۔ اسی طرح رواں سال میں بھی ہونہار طلبہ میں میرٹ کی بنیاد پر لیپ ٹاپ تقسیم کئے جائیں گے۔ پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈ کا قیام ایک تاریخی پروگرام ہے جس کا حجم 12 ارب روپے تک پہنچ چکا ہے اور پنجاب میں 50 ہزار سے زائد طلبا و طالبات اس فنڈ کی بدولت اپنا تعلیمی سفر جاری رکھے ہوئے ہیں اور کوئی ذہین اور باصلاحیت طالب علم محض مالی مشکلات کی وجہ سے اب اعلیٰ اور معیاری تعلیم سے محروم نہیں رہ سکے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ میلینم ڈویلپمنٹ گولز کے مطابق سکول جانے کی عمر کے ہر بچے کو تعلیم تک رسائی مہیا کرنا ریاست کا فرض ہے۔ حکومت پنجاب کی تعلیمی پالیسی اسی مقصد کو حاصل کرنے کیلئے ترتیب دی گئی ہے۔ ہمارا اولین مقصد سوفیصد انرولمنٹ کا حصول ہے جس کیلئے یونیورسل پرائمری ایجوکیشن کی مہم کا آغاز کر دیاگیا ہے جس کے تحت اگلے چند برسوں کے دوران سکول جانے والے تمام بچوں کو داخلہ دے کر سوفیصد شرح خواندگی کا ہدف پورا کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ صوبے کے تمام گرلز سکولوں میں سہولیات کی فراہمی کیلئے 3 ارب 50 کروڑ روپے خرچ کئے جا رہے ہیں جس کے تحت سکولوں میں بیت الخلائ، چار دیواری، پانی و بجلی اور فرنیچر کی سہولیات فراہم کی جائیں گی۔اس موقع پر طلبہ کے نمائندہ وفد نے وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف کے فروغ تعلیم کیلئے کئے گئے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت نے غریب اور باصلاحیت طلبہ کیلئے جو انقلابی پروگرام شروع کئے ہیں ان کی مثال نہیں ملتی۔دریں اثناء شہباز شریف نے تحریک پاکستان کے رہنما اور بانی پاکستان کے دست راست ڈاکٹر سرور غیاث یوسفزئی اور صدارتی ایوارڈ یافتہ نامور محقق و ڈرامہ نگار پروفیسر طٰہٰ خان کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے اپنے الگ الگ تعزیتی پیغامات میں دعا کی کہ اللہ تعالی مرحومین کی ارواح کو اپنے جوار رحمت میں جگہ دے۔